پاکستانی کبوتروں کی شہرہ آفاق نسل علی والے کبوترAli Walay Kabootar

علی والے کبوتر

وہ دوست جو کبوتر پروری کے شوق سے وابستہ ہیں ان کے لئے بے حد ضروری ہے کہ انہیں کبوتروں کی مختلف نسلوں کے بارے میں علم ہو. کبوتروں کی مختلف نسلوں کی انہیں پہچان ہو. ایک اچھے کبوتر کی خصوصیات کے بارے میں جانتے ہوں. اسی صورت میں وہ اچھے پروازی ، بریڈر اور اپنی نسل میں خالص کبوتر اکٹھے کر سکتے ہیں. ورنہ دوسری صورت میں وہ کبوتروں کے نام نہاد بیوپاریوں کے ہتھے چڑھ کے وہ اپنا وقت اور پیسہ برباد کرتے رہیں گے. جیسا کہ اکثر آج کل نئے شوقین حضرات کے ساتھ ہو رہا ہے. اپنے آج کے اس آرٹیکل میں آپ کو کبوتروں کی ایک مشہور و معروف نسل علی والے کبوتروں کے بارے میں مستند معلومات فراہم کرونگا. تاکہ اگرکوئی دوست جو علی والے کبوتروں میں دلچسپی رکھتا ہو تو وہ اسے ٹھیک طرح سے پہچان سکیں

کبوتر پروری کے شوق سے بے شمار افراد وابستہ ہیں.لیکن ان میں سے کچھ افراد ہی ایسے ہیں جو کبوتروں کی مختلف نسلوں کے بارے میں‌مکمل معلومات رکھتے ہوں. اور پھر ان کچھ افراد میں سے بھی معدودے چند ہی ایسے ہیں جو اپنے تجربے اور کبوتر کی پرکھ کی خداداد صلاحیتوں کی بدولت کبوتر کو دیکھ کر اور اس کا بغور مشاہدہ کرنے کے بعد یہ بتا سکیں کہ وہ کبوتر کس نسل سے تعلق رکھتا ہے. اپنی نسل میں خالص ہے یا پھر کراس میں‌ہے. اور یہ سب کچھ وہی بندہ کر سکتا ہے جسے اس نسل کے بارے میں مکمل معلومات ہوں

کبوتروں کی یہ نسل کیسے بنی

ہم بات کر رہے ہیں علی والے کبوتروں کے بارے میں. تو کبوتروں کی یہ مشہور و معروف نسل جس نے اپنی پرواز اور سیان کی خوبیوں کی وجہ سے بے پناہ شہرت حاصل کی. کا تعلق پاکستان کے شہر سیالکوٹ سے ہے. مصدقہ معلومات کے مطابق اس نسل کا تعلق استاد سردار خان کے گھر سے ہے. انہوں نے یہ نسل جن کبوتروں کے ملاپ سے بنائی تھی. ان میں فیمیل (مادی) کا تعلق فیروزپوری نسل سے تھا. جو کہ نواب شیر خان کے گھر کی تھی. اور میل کبوتر(نر) گلودو نسل سے تعلق رکھتا تھا. اور ان دو نسلوں کے کراس سے کبوتروں کی یہ شہرہ آفاق نسل وجود میں آئی. جوکہ علی والے کبوتروں کے نام سے مشہور ہوئی.اورجس نے پرواز اور سیان میں اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوایا

پہچان اور پرکھ

ایک خالص علی والے کبوتر میں درج ذیل خصوصیات پائی جاتی ہیں.گٹھا ہوا مضبوط جسم، گول اور موٹا سر، چونچ کالے رنگ میں. ماتھا سفید، کانوں کے نیچے سفید بال،گردن درمیانے سائز کی لیکن کچھ موٹی،گردن پر سبز اور لال شیڈ دیتے ہوئے بال. گردن سے پوٹ تک کے پر گولائی کی شکل میں، سینہ چوڑا اور باہر کو نکلا ہوا. پرواز کے پروں میں ایک یا دو کالے سلائی دار پر، پرواز والے پر سائز میں دم سے تھوڑے چھوٹے. کمر پے بعض اوقات برائون کلر کی چھاپ، ٹانگیں درمیانے سائز کی اور پنجے خشک اور کالے رنگ میں ہوتے ہیں. ان خصوصیات کو دیکھ کر آپ باآسانی ایک علی والے کبوتر کی پہچان کر سکتے ہیں

علی والے کبوتر کی آنکھ

جہاں تک علی والے کبوتر کی آنکھ میں موجود خصوصیات کا تعلق ہے تو ایک خالص علی والے کبوتر کی آنکھ کا تل سیاہ اور سائز میں چھوٹا. تل کے گرد پہلا دائرہ سیاہی مائل نیلے رنگ کا، آنکھ کی زمین کا رنگ نیلا یا مٹیالک. اور اس میں لال ڈورے موجود ہوتے ہیں. ایک خالص علی والے کبوتر کی پلک پیلے رنگ میں ہوتی ہے. ایک علی والے کبوتر کی پہچان کرتے وقت اگر آپ اوپر بتائی ہوئی خصوصیات کی پرکھ کر کے اسے دیکھتے ہیں. تو آپ ایک خالص علی والے کبوتر کی پہچان میں دیر نہیں کریں گے

Leave a Comment