کبوتروں میں نظامِ ہضم کی خرابی پوٹ بند ہو جانے کے اسباب احتیاطی تدابیر اور علاج

کبوتروں میں پوٹ کا بند ہونا

کبوترپروری کے شوق سے وابستہ افراد کوجو چیز سب سے زیادہ پریشان کرتی ہے. وہ ہے کبوتروں کا مختلف قسم کی بیماریوں میں مبتلا ہو جانا. جس کی وجہ سے انہیں بعض اوقات کافی زیادہ نقصان اٹھانا پڑتا ہے. کبوتروں میں زیادہ تر بیماریاں نظامِ ہضم کی خرابی کی وجہ سے آتی ہیں. نظام ہضم کی خرابی کی وجہ سے کبوتروں کی پوٹ بند ہو جاتی ہے. کبوتر جو خوراک کھاتا ہے اسے ہضم نہیں کر پاتا. کبوتر پانی پی لیتا ہے.لیکن اس کے باوجود بھی خوراک پوٹ میں ہی رہتی ہے. خوراک ہضم نہ ہونے کی وجہ سے انتڑیوں اور معدے تک نہیں پہنچ پاتی. کبوتر دانہ کھانا چھوڑ دیتا ہے. سست ہو کے کھڑا ہو جاتا ہے. پوٹ میں موجود خوراک یا دانہ گل سڑ کے خراب ہو جاتا ہے.اور کبوتر کی موت کا سبب بن جاتا ہے

یورپین ممالک میں تیار ہونے والی ادویات

ہر وہ کبوتر پرور دوست جس کے کبوتر بیماری کا شکار ہوتے ہیں. اس کی پوری کوشش ہوتی ہے کہ کسی طرح اس کے کبوتر صحت یاب ہو جائیں. جس کے لئے وہ اپنی طرف سے پوری کوشش کرتا ہے. لیکن سب سے بڑا مسئلہ یہ ہے کہ ہمارے ہاں ایسی ادویات موجود نہیں ہیں جو کہ خاص طور پر کبوتروں کی اس بیماری یا دیگر کبوتروں میں آنے والی مختلف قسم کی بیماریوں کے لئے بنائی گئی ہوں. یورپئین ممالک میں کبوتروں کی مختلف قسم کی بیماریوں کے لئے باقاعدہ تحقیق کر کے ادویات بنائی گئی ہیں. جیسے اگر ہم نظام ہضم کی خرابی یا پوٹ بند کی بیماری کی بات کریں تو اس کے لئے اوروفارما کمپنی کی ڈائجسٹل یا پروبی زائمی اور پی ایچ پی کی ایل فورس نامی ادویات کے استعمال سے اس بیماری سے فوری طور پر کبوتر ٹھیک ہو جاتا ہے. لیکن ہمارے ہاں یہ ادویات آسانی سے دستیاب نہیں ہیں

کبوتروں کو اس بیماری سے کیسے محفوظ رکھیں

اس لئے بے حد ضروری ہے کہ ان اسباب کو جانا جائے جن کی بدولت کبوتر اس بیماری کا شکار ہوتے ہیں. تاکہ احتیاطی تدابیر اختیار کر کے ان اسباب کو پیدا نہ ہونے دیا جائے اور کبوتر اس بیماری سے محفوظ رہیں. آج کے اس آرٹیکل میں ہم تفصیل کے ساتھ اس بات کا جائزہ لیں گے کہ کبوتروں کے اس بیماری میں مبتلا ہونے کے اسباب کیا ہیں. کون سی احتیاطی تدابیر اختیار کر کے ہم اپنے کبوتروں کو اس بیماری سے بچا سکتے ہیں. اور جو کبوتر اس بیماری کا شکار ہو جاتے ہیں. تو کس طرح سے ان کا علاج کیا جائے کہ وہ صحت یاب ہو سکیں

کبوتروں کی پوٹ بند ہونے کے اسباب

سب سے پہلے ہم بات کرتے ہیں کہ وہ کون سے اسباب ہیں جن کی وجہ سے کبوتروں کا نظام ہضم خراب ہوتا ہے اور وہ پوٹ بند ہونے کی بیماری کا شکار ہوتے ہیں.پہلا سبب یہ کہ جیسا کہ ہم سب جانتے ہیں کہ کبوتروں کے دانت نہیں ہوتے. اسی لئے کبوتر جو خوراک یا دانہ کھاتے ہیں اسے ہضم کرنے کے لئے چھوٹے چھوٹے باریک پتھر یا روڑ کھاتے ہیں. اوران باریک پتھریا روڑوں کی رگڑ سے وہ خوراک یا دانہ ہضم ہوتا ہے جو کبوتروں نے کھایا ہوا ہوتا ہے. جنگلی یا پھر وہ کبوتر جو باہر پھرتے رہتے ہیں وہ تو کسی نہ کسی جگہ سے ڈھونڈ کر یہ باریک پتھر کھا لیتے ہیں. لیکن ہمارے پالتو کبوتر خاص طور پر وہ بریڈر کبوتر جو بند رہتے ہیں وہ ان کے لئے ہمارے محتاج ہوتے ہیں.نطامِ ہضم کی خرابی اور پوٹ بند ہونے کا دوسرا سبب غیر متوازن اور غیر معیاری دانہ ہونے کے ساتھ ساتھ کبوتروں کے پانی کے برتن کا صاف نہ ہونا ہے. اور اسکا تیسرا سبب ضرورت سے زیادہ مقدار میں سٹیرائیڈ کا استعمال ہے

بیماری سے بچائو کی احتیاطی تدابیر

ہفتے میں ایک بار زیرو نمبر کی ماربل چپس اپنے کبوتروں کے آگے کھانے کے لئے رکھیں. بہتر ہے ماربل چپس میں کچھ مقدار میں پرانے تندور کی مٹی کوٹ کے اور پرانی اینٹوں کو کوٹ کے ان کے برادے کو مکس کر لیں. بریڈر کبوتروں کے لئے تو یہ بے حد ضروری ہے. کبوتروں کو متوازن اور معیاری دانہ استعمال کروائیں. انہیں استعمال کروایا جانے والا دانہ اس طرح کا ہو جو ان کی تمام غذائی ضروریات کو پورا کرتا ہو. دانہ صاف ستھرا ہو.کبوتروں کے پانی کے برتن کا خاص طور پر خیال رکھیں. جب بھی کبوتروں‌کے آگے پینے کے لئے پانی کا برتن رکھیں تو تازہ پانی مہیا کریں. کبوتر جب پانی پی لیں تو برتن کو ان کے آگے سے اٹھا لیںِ. اور دوبارہ جب کبوتروں‌کو پانی پلانا مقصود ہو تو نئے سرے سے تازہ پانی برتن میں بھر کے ان کے آگے رکھیں. کبوتروں کی پرواز میں اضافہ کے لئے اگر آپ سٹیرائیڈز کا استعمال کرتے ہیں تو ان کی مقدار کم سے کم رکھیں جو کی کبوتر کے لئے قابل برداشت ہو

پوٹ بند بیماری کے علاج

آرٹیکل کے آخر میں اب ہم بات کریں گے کہ اگر ہمارا کوئی کبوتر اس بیماری کا شکار ہو جاتا ہے تو اس کا علاج کس طرح کرنا ہے. اوپرمیں نے کچھ یورپین ممالک میں تیار ہونے والی ادویات کا ذکر کیا تھا جن کے استعمال سے کبوتروں کے نظام ہضم کی خرابی یا پوٹ بند ہونے کا فوری علاج ممکن ہے. لیکن چونکہ وہ ادویات ہمارے ہاں‌آسانی سے دستیاب نہیں‌ہیںِ. اس لئے یہاں آپ کے ساتھ دیسی یا مقامی طور پر دستیاب ادویات کے ساتھ پوٹ بند ہونے کے علاج کے کچھ آزمودہ اور رزلٹڈ طریقہ کار آپ دوستوں کے ساتھ شئیر کر رہا ہوں جن کہ استعمال سے آپ اپنے اس بیماری میں‌مبتلا کبوتر کا علاج کر سکتے ہیں.

پہلا طریقہ علاج

سونف، خشک پودینہ، سفید زیرہ اور انار دانہ. ان سب چیزوں کا آدھا آدھا چمچ لے کر ان سب کو کسی ہاون دستہ میں‌ڈال کر اچھی طرح رگڑ لیں. چار چنے کے برابر پرانا گڑ لے لیں. اور شام کو کسی برتن میں ایک لیٹر سادہ پانی لے کر ان سب چیزوں کو مکس کر کے رکھ دیں. صبح کے وقت ہر اس کبوتر کو جو کہ پوٹ بند ہونے کی بیماری کا شکار ہے اسے پانچ سی سی یہ والا پانی پلا کر چھوڑ دیںِ. کھانے میں کبوتر کو روٹی کے بھورے دیں. رات کو پانچ سی سی دودھ میں تین قطرے شہد کے مکس کر کے متاثرہ کبوتر کو پلا دیں. انشاء اللہ ایک دو دن کے اندر ہی آپ کے متاثرہ کبوتر ٹھیک ہو جائیں گے. اگر یہ پانی آپ ہر پندرہ دن میں ایک مرتبہ اپنے کبوتروں کو احتیاطی طور پر استعمال کرواتے رہیں تو آپ کے کبوتر ہاضمے کی خرابی یا پوٹ بند ہونے کی بیماری کا شکار نہیں ہونگے

دوسرا طریقہ علاج

کبوتر اگر پوٹ بند ہونے کی بیماری میں مبتلا ہے تو سب سے پہلے آپ اپنے اس کبوتر کو پلٹا کے اسے اچھی طرح سے صاف کر دیں. پھر ایک گلاس سادہ پانی لے کر اس میں میٹھے سوڈے کی ایک چٹکی اچھی طرح‌مکس کر کے اس میں سے دس سی سی پانی کبوتر کو پلا کر چھوڑ دیں. جب کبوتر یہ پانی چلا لے تو اسے اس طریقہ سے روٹی کے بھورے بنا کے کھلائیں. روٹی کا ایک ٹکڑا لے لیں جس کے پچیس سے تیس بھورے بن جائیں. کھجور کی گھٹلی جتنا دہی کا پنیر لے لیں. دو کالی مرچ لے کر انہیں اس طرح کوٹ لیں کہ ان کے چھوٹے چھوٹے ٹکڑے ہو جائیں. اب روٹی کے بھوروں، پنیر اور کالی مرچ کے باریک ٹکڑوں‌کو خوب اچھی طرح‌مکس کر کے وہ بھورے کبوتر کو کھلائیں. جب کبوتر روٹی کے بھورے کھا لے تو اسے ایک دس سی سی کی سرنج میں پانچ سی سی سادہ پانی ، دو سی سی عرق گلاب اور تین سی سی عرق سونف مکس کر کے بھر کے کبوتر کو پلا دیں. رات کو کبوتر کو کالی مرچ کے برابر گڑ دے دیں. تین دن تک یہ علاج جاری رکھیں. آپ کا کبوتر ٹھیک ہو جائے گا

تیسرا طریقہ علاج

میڈیکل سٹور سے گیوسکون سیرپ اور فلیجل کی ٹیبلٹ لے لیں. پولٹری میڈیکل سٹور سے انروفلوکساسین سیرپ لے لیںِ. آپ کے جس کبوتر کی پوٹ بند ہے اسے سب سے پہلے پلٹا کے صاف کر لیں. اور پھر کچھ دیر بعد اس کبوتر کو دس سی سی کی سرنج میں‌پانچ سی سی گیوسکون سیرپ اور پانچ سی سی سادہ پانی مکس کر کے کبوتر کو پلا کر ایک گھنٹہ کے لئے چھوڑ دیں. ایک گھنٹہ کے بعد کبوتر کو سادہ روٹی کے بھورے کھانے کے لئے دیں جتنے وہ خود کھا لے. رات کو کبوتر کو بند کرتے وقت فلیجل ٹیلبٹ کے چوتھا حصہ کھلا کر انروفلوکساسین کے دو یا تین قطرے کبوتر کے گلے میں ڈال دیں. دوسرے دن آپ کا کبوتر ٹھیک ہو جائے گا. علاج کو تین سے پانچ دن تک جاری رکھیں

اوپر بتائے ہوئے یہ تینوں طریقہ کار رزلٹڈ اور آزمودہ طریقہ علاج ہیں جن سے آپ کا وہ کبوتر جس کی پوٹ بند ہو اللہ کے حکم سے بالکل ٹھیک ہو جائے گا.

Leave a Comment