کبوتروں میں سانس کی بیماری اور اس کا علاج

کبوتروں میں سانس کی بیماری

آج کے اس آرٹیکل میں ہم بات کریں گے کبوتروں میں سانس کے بیماری کے بارے میں. ہر وہ کبوتر پرور دوست جس نے کبوتر رکھے ہوئے ہوں اسے اپنے کبوتروں میں اس بیماری کا سامنا کرنا پڑتا ہے. کبوتروں میں یہ بیماری بیکٹیریل انفیکشن کی وجہ سے ہوتی ہے. اس بیماری میں‌کبوتر کو سانس لینے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے. جس کی وجہ سے کبوتر منہ کھول کے سانس لیتا ہے. کبوتر کے سانس لینے کی رفتار بھی تیز ہو جاتی ہے. اس بیماری کا فوری طور پر علاج کرنا بے حد ضروری ہوتا ہے. تاکہ بیماری کا سبب بننے والے بیکٹیریا کی افزائش کو روکا جاسکے. بصورتِ دیگر یہ  بیماری شدت اختیار کر جاتی ہے. اور متاثرہ کبوتر دو تین دن کے اندرمرجاتا ہے

امپورٹڈ ادویات

اب ہم دیکھتے ہیں کہ سانس کی بیماری سے متاثرہ اس کبوتر کا علاج کس طرح سے کرنا ہے. اور کون سی وہ ادویات ہیں جن کو استعمال کر کے ہم اپنے کبوتر کو اس بیماری سے نجات دلا سکتے ہیں.یورپ میں بہت ساری کمپنیز کبوتروں کے لئے ادویات تیار کرتی ہیں. اور ان کمپنیز کی سانس کی بیماری کی کئی ادویات مختلف ناموں سے موجود ہیں.جیسے پانٹیکس اورنیمکس ڈی ٹی 100 گرام یا پھرفارما کی اورنیتھوسس کیور کے استعمال سے آپ کے کبوتر فوری طور پر ریکور ہو سکتے ہیں. ان کے علاوہ بھی کبوتروں کی سانس کی بیماریوں کے لئے مختلف قسم کی ادویات موجود ہیں. آپ کے شہر میں اگر کوئی اچھی برڈ میڈیسن شاپ موجود ہے جو پرندوں کی امپورٹڈ ادویات سیل کرتےہیں. تو وہاں سے آپ یہ ادویات حاصل کر کے اپنے کبوتروں کا علاج کر سکتے ہیں

موفیسٹ اور سیف سپین

اور اگر یہ ادویات آپ کومیسر نہیں ہیں تو پھر آپ میڈیکل سٹور سے موفیسٹ چارسو ملیگرام کی ٹیبلٹس لے لیں.اس ٹیبلٹ کا سالٹ موکسی فلوکساسین ہے. ایک ٹیبلٹ کے کم از کم چھ حصے کر لیں. اور سانس کی بیماری میں مبتلا کبوتر کو ایک حصہ دن میں ایک مرتبہ کھلا کر اسے اوپر سے پانچ سی سی نیم گرم پانی پلا دیا کریں. پانچ دن تک یہ علاج جاری رکھیں. انشاء اللہ تیسرے یا چوتھے دن آپ کا کبوتر اس بیماری سے ٹھیک ہو جائے گا. اس کے علاوہ سیف سپین سیرپ یا سیف سپین کیپسولزسے بھی سانس کی بیماری میں مبتلا کبوتر کا علاج کیا جا سکتا ہے. اگر آپ سیف سپین کیپسولز استعمال کر رہے ہیں تو ایک کیپسول کو چار حصوں میں تقسیم کر لیں. اور ایک حصہ دن میں ایک مرتبہ کبوتر کو کھلا دیں جو سانس کی بیماری میں مبتلا ہے. اور اگر آپ سیف سپین سیرپ استعمال کر رہے ہیں تو ہاف سی سی سیرپ پانچ سی سی سادہ پانی میں مکس کر کے کبوتر کو ایک مرتبہ صبح اور ایک مرتبہ شام کو پلا دیں. پانچ دن تک یہ علاج جاری رکھیں آپ کے کبوتر صحت یاب ہو جائیں گے

انٹی بائیوٹک

موفیسٹ اور سیف سپین انٹی بائیوٹک ادویات ہیں. یہ اس بیکٹیریا کو جو کبوتر میں سانس کی بیماری کا باعث بنتا ہے کی افزائش کو روکتی ہیں. انٹی بائیوٹک ادویات بیماری کو کنٹرول تو کرتی ہیں لیکن ان کے مضر اثرات بھی ہوتے ہیں. ان کا ضرورت سے زیادہ استعمال کبوتروں میں قوتِ مدافعت کو کم کرتا ہے. اور اگر ان ادویات کو مسلسل استعمال کرواتے رہیں تو قوت مدافعت بالکل ختم ہو جاتی ہے. ایسی صورت میں اگر دوبارہ بیماری کبوتروں پے حملہ آور ہوتی ہے تو چونکہ کبوتروں کی قوت مدافعت بالکل ختم ہو چکی ہوتی ہے توکبوتر جلد ہی مرنا شروع ہو جاتے ہیں

قوتِ مدافعت

جہاں تک بات ہے قوت مدافعت کی تو جانداروں کے لئے یہ کس قدراہمیت کی حامل ہے اس کا اگر ہمیں پہلے اندازہ نہیں تھا تو اب کرونا کی وجہ سے ہرکوئی قوت مدافعت کی اہمیت سے آگاہ ہے. اور اپنی اپنی قوت مدافعت بڑہانے کے لئے سرگرداں نظر آتا ہے. قوت مدافعت ہر جاندار کے اندر موجود ایک ایسا قدرتی سسٹم ہے جو باہر سے حملہ آور ہونے والے جراثیم اور وائرسز کے خلاف مدافعت پیش کرتا ہے. اس لئے بے حد ضروری ہے کہ کبوتروں کو بھی اس طرح کی اشیاء کا استعمال کروایا جائے جس سے ان کا مدافعتی سسٹم مضبوط ہو اور وہ خود سے بیماریوں کا مقابلہ کر سکیں. ادرک، لہسن، ہلدی، سیب کا سرکہ یہ سب ایسے قدرتی انٹی بائیوٹک ہیں جن کو ہم اپنے کبوتروں کو استعمال کروا سکتے ہیں. اگر آپ اپنے کبوتروں کو یہ سب اشیاء مہینے میں دو مرتبہ کسی نی کسی طرح استعمال کرواتے رہیں. تو ان کی قوت مدافعت میں اضافہ ہوگا اور وہ خود سے بہتر طور پر بیماریوں‌کا مقابلہ کر سکیں گے

Leave a Comment